Federal Emergency Management Agency

تیار رہیں: طوفانِ بادوباراں کا موسم گرمیوں کے ساتھ ختم نہیں ہو جاتا

Main Content
Release date: 
07/29/2013
Release Number: 
4086-197

ٹرینٹون، نیو جرسی -- طوفانِ بادوباراں کا موسم ہر سال باضابطہ طور پر 1 جون سے شروع ہوتا ہے، لیکن فائرمین کے میلے، جس میں ساحل پر پکوان اور تفریح ہوتی ہے کے برعکس، طوفانِ بادوباراں کے لیے موسم گرمیوں کے ساتھ ختم نہیں ہو جاتا۔

جیسے ہی آپ تعطیلات کے بعد سکول کو واپسی کی خریداری کی منصوبہ بندی شروع کرتے ہیں، اب یہ آپ کے بیٹریوں، بوتل بند پانی اور دیگر ہنگامی حالت کی رسد جو اگر نیوجرسی میں ایک موسمِ خزاں کا طوفان آتا ہے تو اس میں ضروری ہو سکتی ہے کی پڑتال کے لیے ایک اچھا وقت ہو سکتا ہے۔

جبکہ طوفانوں کا اگست اور ستمبر میں عروج پر ہونے کا امکان ہوتا ہے، امریکا میں طوفانِ بادوباراں کا موسم 30 نومبر تک وسیع ہو گیا ہے، اور جبکہ شکرانِ نعمت (تھینکس گونگ) کے تہوار پر طوفان کا خطرہ کم لگتا ہے، ایسا ہو سکتا ہے۔

گزشتہ سال سب سے بڑا طوفان سینڈی اس کے کچھ ہفتوں بعد ہی آ گیا تھا۔

سینڈی 29 اکتوبر کو نیوجرسی میں گرم ممالک میں چلنے والی آندھیوں کے طور پر، ساحلی علاقوں میں سیلاب لاتے ہوئے، درختوں کو گراتے ہوئے، عمارتوں کو پھاڑتے ہوئے اور پوری ریاست میں گھروں اور دفاتر کو منہدم کرتے ہوئے آیا تھا۔ نیوجرسی کے چالیس مکین اپنی جانیں ہار گئے۔ نو ماہ بعد، بحالی جاری ہے۔ کترینہ، 29 اگست کو آنے والے ایک طوفان جس نے 2005ء میں نیو اورلینز اور گلف کوسٹ کو تباہ کر دیا تھا، کے بعد اس طوفان کو امریکی تاریخ میں دوسرا مہنگا ترین طوفان کہا گیا۔

سینڈی کی طرح، امریکی تاریخ میں زیادہ تر تباہ کن طوفان لیبر ڈے کے بعد، زندگیوں کے بہت بڑے نقصان اور بلین ڈالرز میں املاک کے نقصان کا سبب بنتے ہوئے آئے۔

8 ستمبر 1900ء کو، ایک درجہ 4 کے طوفان نے گیلویسٹن جزیرہ، ٹیکساس کو نگل لیا تھا۔ طوفانی مدوجذر 15 فٹ تک اٹھا اور اندازاً 8،000 افراد کو ہلاک کرتے ہوئے، گھروں اور دفاتر کو بہا لے گیا۔

18 ستمبر 1920ء کو، اُس وقت ریکارڈ کردہ تیز ترین ہواؤں پر مشتمل درجہ 4 کا ایک طوفان میامی ساحل اور اندرونِ میامی سے ٹکرا گیا تھا۔ یہ یقین کرتے ہوئے کہ طوفان گزر گیا، ہزاروں لوگ طوفان کے عارضی طور پر تھمنے کے آدھے گھنٹے بعد گھروں سے باہر نکل آئے اور بغیر پناہ کے اس کے پھندے میں پھنس گئے کیونکہ طوفان نے دوبارہ شدت اختیار کر لی تھی۔ میامی میں اندرونِ شہر میں ہر عمارت کو یا تو نقصان پہنچا تھا یا تباہ ہو گئی تھی اور سینکڑوں لوگ ہلاک ہو گئے تھے۔ پھر طوفان خلیجِ میکسیکو سے گزرا، جہاں اس نے پینساکولا ساحل پر واقعی ہر ستون، کشتی اور ہر ذخیرہ گاہ کو تباہ کر دیا۔

آخر میں، طوفان کے بعد 800 سے زائد لوگوں کے لاپتہ ہونے کی اطلاع ملی اور اگرچہ اعدادوشمار نامکمل ہیں، ہلالِ احمر نے طوفان کے نتیجے میں 373 اموات اور 6،381 زخمیوں کو ریکارڈ کیا۔

20 اور 21 ستمبر 1938ء کو، ایک تیزرفتار طوفان وسط اٹلانٹک اور نیو انگلینڈ سے اتنی طاقت کے ساتھ ٹکرایا کہ ہزاروں افراد ششدر ہی رہ گئے تھے۔ لانگ آئی لینڈ پر، کوئی 20 افراد جو ایک مقامی سینما میں بعد دوپہر ایک فلم دیکھ رہے تھے سمندر میں بہہ گئے اور ڈوب گئے۔ ان میں سے ایک منصوبہ ساز تھا۔ رہوڈ جزیرے پر پرووائڈینس اندرونِ شہر میں، سیلابی پانی تیزی کے ساتھ گلیوں میں بھر گیا، گاڑیوں اور سڑکوں پر کھڑی کاروں کو ڈبو دیا جبکہ ان کے سوار ڈوبنے سے بچنے کے لیے دفاتر کی عمارتوں کی اونچی منزلوں پر چڑھ گئے۔ ریکارڈ توڑ طوفان، شدید گھبراہٹ کے درمیان 308 ملین ڈالر کے نقصان کا سبب بنتے ہوئے، 600 اموات، کا ذمہ دار ٹھہرا۔

14 اکتوبر 1954ء کو، ہیزل طوفان درجہ 4 کے طوفان کے طور پر کیلابیش، شمالی کیرولینا میں ایک قمری مدوجذر پر ایک 18 فٹ اونچی طوفانی لہر کے ساتھ ساحلی خطے کو ڈبو گیا۔ جب طوفان گزر گیا، لانگ بیچ، شمالی کیرولینا میں 357 عمارتوں میں سے صرف 5 عمارتیں ابھی تک کھڑی تھیں۔ ریلے، شمالی کیرولینا موسمیات نے رپورٹ دی کہ "ریاستی لکیر اور کیپ فیئر کے درمیان پانی سے متصل زمین پر سے تہذیب کے تمام آثار عملی طور پر فنا ہو گئے۔" سینکروں زخمیوں کے ساتھ، شمالی کیرولینا میں اُنیس افراد ہلاک ہوئے؛ 15،000 گھر تباہ ہو گئے اور دیگر 39،000 کو نقصان پہنچا تھا۔

11 ستمبر 1960 کو، پورے فلوریڈا میں ڈونا طوفان بڑی تیزی سے آیا، پھر شمالی کیرولینا، وسط اٹلانٹک ریاستوں اور نیو انگلینڈ سے ہوتا ہوا مشرق کی طرف، امریکہ میں 387 ملین ڈالر کا نقصان اور اپنے راستے میں دیگر جگہوں پر 13 ملین ڈالر کے نقصان کا سبب بنتے ہوئے چلا گیا۔

مندرجہ بالا جیسے بیانات آپ کے خاندان اور املاک کو طوفان یا حاری طوفان کے ممکنہ تباہ کن اثرات سے بچانے کے لیے ایک منصوبہ بنانے کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہیں۔

اسے ذہن میں رکھتے ہوئے، اپنی ہنگامی حالت کی رسد کی فہرست بنانے اور وہ اشیاء جن کی آپ کو ہنگامی حالت میں ضرورت پڑ سکتی ہے کا ذخیرہ کرنے کے لیے ایک دکان پر جانے کے لیے کچھ وقت کیوں نہ نکالا جائے۔

وفاقی ایجنسی برائے انتظامِ ہنگامی حالات کی ویب سائٹ، www.ready.gov، پر معلومات کا ایک خزانہ ہے کہ اگر آئندہ مہینوں میں سینڈی جیسی کوئی اور آفت آتی ہے تو اپنے خاندان کے لیے کیسے منصوبہ بنایا جائے، کیسے تیاری کی جائے اور کیسے اسے بچایا جائے۔

FEMA کا مشن ہمارے شہریوں اور بروقت پہنچنے والے امدادی کارکنوں کی مدد کرنا ہے یہ یقینی بنانے کے لیے کہ تمام خطرات کے لیے تیار رہنے، ان سے بچنے، ان کا جواب دینے، ان سے بحالی، اور ان میں تخفیف کے لیے ہم بطورِ قوم تعمیر، امداد، اور اپنی قابلیت کو بڑھانے کے لیے مل کر کام کرتے ہیں۔

www.fema.gov/blog، www.twitter.com/fema، www.facebook.com/fema، اور www.youtube.com/femaپر FEMA کو آن لائن فالو کریں- www.twitter.com/craigatfema پر منتظم کریگ فیوگیٹ کی سرگرمیوں کو بھی فالو کریں۔

سماجی میڈیا کے مہیا کیے گئے روابط صرف حوالے کے لیے ہیں۔ FEMA کسی بھی غیر سرکاری ویب سائٹ، کمپنیوں یا ایپلیکیشنز کی منظوری نہیں دیتی۔

Last Updated: 
07/31/2013 - 13:25
State/Tribal Government or Region: 
Related Disaster: 
Back to Top