Main Content

6 ماہ بعد، نیویارک کے علاقے سینڈی سے بحالی میں پیش رفت کر رہے ہیں

Release date: 
04/25/2013
Release Number: 
213

نیویارک - 29 اکتوبر 2012 کو کو سینڈی طوفان آنے کے چھ ماہ میں، نیویارک کی بحالی میں نمایاں پیش رفت کی گئی ہے۔

لگ بھگ تمام ملبہ ہٹا دیا گیا ہے۔ بہت سے آفت زدگان اپنے گھروں کو لوٹ چکے ہیں اور نقصان ذدہ یا تباہ شدہ نجی املاک کو مرمت یا تبدیل کر چکے ہیں۔ کاروبار دوبارہ کھل رہے ہیں۔

بہت سے سرکاری سکول، لائبریریاں، سماجی مراکز اور دیگر ادارے، بشمول نیویارک یونیورسٹی لینگون طبی مرکز، بیلیوو ہسپتال اور کونی آئی لینڈ ہسپتال دوبارہ کھل گئے ہیں۔

فروری میں، وفاقی ایجنسی برائے انتظامِ ہنگامی حالات نے مستقبل میں سیلابی واقعات کے لیے گھر مالکان، کاروباری مالکان اور سرکاری عمارات کی منصوبہ بندی کرنے میں مدد کے لیے مشاورتی سیلابی خطرہ ڈیٹا جاری کیا تھا۔ بیلیوو ہسپتال ان عمارات میں سے ہے جو پہلے ہی مستقبل کے سیلاب سے خود کو بچانے کے لیے مشاورتی بنیادی سیلابی ارتفاع کا ڈیٹا استعمال کر رہی ہیں۔

FEMA کے وفاقی رابطہ افسر برائے سینڈی طوفان کاروائیاں، مائیکل ایف برائن نے کہا، "سینڈی کے بعد چھ ماہ میں نیویارک نے غیرمعمولی پیش رفت کی ہے۔  لیکن کام ابھی پورا نہیں ہوا۔ تخفیفی اقدامات کو نافذ کرنے کے لیے ہم اپنے ریاستی اور مقامی شراکت داروں کے ساتھ کام کر رہے ہیں یہ یقینی بنانے کے لیے کہ نیویارک مستقبل کے طوفانوں کا مقابلہ بہتر طور پر کرنے کے قابل ہے۔"

بحالی کی کوشش میں پورا معاشرہ، بشمول مقامی، ریاست، وفاق اور قبائل، نجی شعبہ اور رضاکار اور عقائد کی بنیاد پر تنظیمیں شامل ہیں۔

ابھی تک، 6.6 بلین ڈالر افراد اور گھرانوں کو آفتی امداد، کم شرحِ سُود کے آفتی قرضوں، سیلابی بیمہ کے دعووں کی ادائیگیوں اور ملبہ ہٹانے، سرکاری عمارتوں کی مرمت یا تبدیلی اور ہنگامی اخراجات کی تلافی کے لیے پیسہ دینے کے لیے فراہم کیے جا چکے ہیں۔

مستحق آفت زدگان کی گھروں کی مرمتوں، عارضی کرایہ داری اخراجات اور دیگر طوفان سے متعلقہ غیر بیمہ شدہ نقصانات میں مدد کرنے کے لیے FEMA نے نیویارک میں افراد اور گھرانون کے لیے 959 ملین ڈالر سے زائد کی منظوری دی ہے۔

امریکی چھوٹے کاروباروں کی انتظامیہ نے لگ بھگ 22،000 گھر مالکان، کرایہ داروں اور کاروباروں کے لیے کم شرحِ سُود کے آفتی قرضوں کی منظوری دی ہے جن کا میزان 1.4 بلین ڈالر سے زائد بنتا ہے۔

قومی سیلابی بیمہ پروگرام نے تقریباً 3.4 بلین ڈالر دعووں میں 56،766 پالیسی رکھنے والوں کو ادا کیے ہیں۔

 

6 ماہ بعد، نیویارک کے علاقے سینڈی سے بحالی میں پیش رفت کر رہے ہیں - صفحہ 2

ملبہ ہٹانے کا کام، جو مضافات کی تعمیرِ نو کے لیے ضروری ہے، تقریباً 95 فیصد مکمل ہو چکا ہے۔ امریکی فوج کے انجینئرنگ کے دستوں اور مقامی اور ریاستی ایجنسیوں نے اندازہ شدہ 6 ملین مکعب گز ملبے میں سے تقریباً 5.7 ملین صاف کر دیا ہے۔ 

دیگر اخراجات کے علاوہ، FEMA نے ریاستی، قبائلی اور مقامی حکومتوں کو زرِ تلافی کی ادائیگی اور مستحق نجی بلامنافع کام کرنے والی تنظیموں کو ہنگامی امداد دینے سے متعلقہ اخراجات، ملبہ ہٹانے اور نقصان زدہ سرکاری عمارات کی مرمت یا تعمیرِ نو کے لیے 848 ملین ڈالر سے زائد عوامی امدادی گرانٹس کی منظوری دی ہے۔

ان گرانٹس میں 114 ملین ڈالر سے زائد نیویارک یونیورسٹی لینگون طبی مرکز کو عارضی مرمتوں، مریضوں کے انخلاء اور دیگر ہنگامی حالت سے متعلقہ اخراجات کے لیے؛ 5.1 ملین ڈالر نیویارک شہر کے محکمہ تھفظِ ماحولیات کو 16 پمپ اسٹیشنوں کی مرمت یا تعمیرِ نو کے لیے؛ اور 3.8 ملین ڈالر لانگ بیچ پبلک سکولوں کو ضلع کے پرائمری، مڈل اور ہائی سکولون کی مرمت کے لیے شامل ہیں۔

مقامی حکومتوں کے زیرِ انتظام اور FEMA کی جانب سے سرمایہ فراہم کردہ پناہ اور عارضی ضروری پاور پروگرام کی وجہ سے 21،000 سے زائد خاندان اپنے طوفان سے نقصان زدہ گھروں میں رہنے کے قابل تھے جبکہ انہیں مرمت کیا جا رہا تھا۔

کرائے کی رہائشوں کی کمی کی وجہ سے 5,933 افراد اور خاندان عبوری پناہ میں امداد کے پروگرام کے تحت عارضی طور پر ہوٹلوں کے کمروں میں مقیم رہے ہیں۔

طوفان کے چھ ماہ بعد، FEMA کے تقریباً 1،500 اہلکار نیویارک میں ملازمت پر ہیں، جن میں تقریباً 400 مقامی باشندے ہیں جنہیں بحالی کی کاروائیوں میں مدد کے لیے رکھا گیا تھا۔

آفت سے بحالی کے مراکز پر بحالی کے عمل میں طوفان کے آفت زدگان بالمشافہ امداد وصول کرنا جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ابھی تک، مراکز پر 181،000 سے زائد تشریف آوریاں ہوئی ہیں۔

آفت کی ابتداء میں، آفت سے بحالی کے وفاقی رابطہ شعبہ شروع کیا گیا جب ایک درجن سے زائد وفاقی ایجنسیاں آفت سے بحالی کے قومی فریم ورک کے تحت نیویارک میں تعینات کی گئیں۔ ان کا مشن ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کرنا اور ریاست نیویارک کے لیے ایک جامع، پورے علاقے کی بحالی حکمتِ عملی  کے تحت ریاستی اور مقامی حکام اور سینکڑوں شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کرنا تھا۔

ان گرمیوں میں اجراء کے لیے ترتیب دی گئی، بحالی میں امداد کی حکمتِ عملی اس بات پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے کہ وفاقی حکومت نیویارک کو دوبارہ بہتر، مضبوط تر اور ہوشیار تر تعمیر ہونے میں کیسے مدد کر سکتی ہے۔ مقامی اور قومی توانائی، رہائش، ذرائع نقل و حرکت، بنیادی ڈھانچہ، صحت، انسانی خدمات، معیشت، اور ماحولیاتی ماہرین کی جانب سے بھرپور رائے کے علاوہ، حکمتِ عملی دیگر بڑی آفات سے کامیاب کاروائیوں کی عکاس ہے۔

دستاویز میں اس سال کے شروع میں کانگرس اور صدر اوبامہ کی جانب سے منظور کردہ سینڈی کے لیے ضمنی فنڈز کے اربوں ڈالر کے مؤثر استعمال پر رہنمائی بھی شامل ہے۔ نیویارک میں آفت سے بحالی کا وفاقی رابطہ جاری رہے گا۔

نیویارک میں سینڈی طوفان سے بحالی پر مزید جاننے کے لیے، دیکھیںwww.FEMA.gov/SandyNY۔

###

6 ماہ بعد، نیویارک کے علاقے سینڈی سے بحالی میں پیش رفت کر رہے ہیں - صفحہ 3

FEMA کا مشن ہمارے شہریوں اور بروقت پہنچنے والے امدادی کارکنوں کی مدد کرنا ہے یہ یقینی بنانے کے لیے کہ تمام خطرات کے لیے تیار رہنے، ان سے بچنے، ان کا جواب دینے، ان سے بحالی، اور ان میں تخفیف کے لیے ہم بطورِ قوم تعمیر، امداد، اور اپنی قابلیت کو بڑھانے کے لیے مل کر کام کرتے ہیں۔

بحالی کی امداد نسل، رنگ، مذہب، قومیت، جنس، عمر، معذوری، انگریزی کی قابلیت یا معاشی مرتبے کا خیال کیے بغیر دستیاب ہے۔ اگر آپ یا آپ کے کسی جاننے والے کے ساتھ امتیاز برتا گیا ہے، (3362) FEMA-621-800 پر FEMA کے ٹول فری نمبر پر کال کریں۔ TTY کے لیے 7585-462-800 پر کال کریں۔

Last Updated: 
04/26/2013 - 15:14
State/Tribal Government or Region: 
Related Disaster: