Federal Emergency Management Agency

New York Hurricane Sandy (DR-4085)

Incident period: 10/27/2012 to 11/09/2012
Major Disaster Declaration declared on 10/30/2012

Updates and Articles, Blogs, and News Releases

July 9, 2013
News Release
نیو یارک – ریاست نیو یارک کی درخواست پر، فیڈرل ایمرجنسی منیجمنٹ ایجنسی نے عارضی پناہ گزینی کی اعانت (ٹی ایس اے) کے پروگرام میں 30 دن کی توسیع کو منظوری دی ہے، جو سینڈی طوفان کے ایسے اہل پسماندگان کو شریک ہوٹلوں میں ٹھہرنے کی اجازت دیتا ہے جو اپنے گھروں میں نہیں لوٹ سکتے ہیں۔  
April 30, 2013
News Release
نیو یارک - بدھ، 1 مئی صبح 9 بجے سے، ناسو اور سفولک کاؤنٹیز میں چار ہنگامی حالات سے بحالی کے مراکز ہنگامی حالات کے قرضوں کے روابط بڑھانے کے مراکز بن جائیں گے.
April 29, 2013
News Release
نیویارک –  ہری کین سینڈی کے متاثرین30  اپریل تک نیو یارک شہر کے چار ڈیزاسٹر ریکوری مراکز میں تشریف لاسکتے ہیں۔فیڈرل ایمرجنسی مینجمنٹ ایجنسی اور یو ایس سمال بزنس ایڈمنسٹریشن کے ماہرین کی طرف  مندرج ذیل خدمات دستیاب ہیں:
April 26, 2013
News Release
نیویارک - 29 اکتوبر 2012 کو کو سینڈی طوفان آنے کے چھ ماہ میں، نیویارک کی بحالی میں نمایاں پیش رفت کی گئی ہے۔لگ بھگ تمام ملبہ ہٹا دیا گیا ہے۔ بہت سے آفت زدگان اپنے گھروں کو لوٹ چکے ہیں اور نقصان ذدہ یا تباہ شدہ نجی املاک کو مرمت یا تبدیل کر چکے ہیں۔ کاروبار دوبارہ کھل رہے ہیں۔بہت سے سرکاری سکول، لائبریریاں، سماجی مراکز اور دیگر ادارے، بشمول نیویارک یونیورسٹی لینگون طبی مرکز، بیلیوو ہسپتال اور کونی آئی لینڈ ہسپتال دوبارہ کھل گئے ہیں۔
April 26, 2013
News Release
نیو یارک - ریاست نیو یارک کی گزارش پے، فیڈرل امرجنسی مینجمینٹ ایجنسی نےتغیری پناہ کی امداد (ٹی ایس اے) کے پروگرام  کے لئے- 28-دن کی وسعت منظور کی ہے، جو کہ اہلیت رکھنے والے طوفان سینڈی کے بچنے والوں کو جو اپنے گھروں کو واپس نہیں جا سکتے حصّہ لینے والے ہوٹلوں میں رہنے کی اجازت دیتی ہے.
November 17, 2012
News Release
نیو یارک ۔ ہری کین سینڈی سے متاثر افراد کی امداد کے لئے نیویارک میں فیڈرل ایمرجینسی منیجمنٹ ایجنسی کے 31 ڈیزاسٹر ریکوری مراکز ہیں نوٹ کریں کہ ہر سائٹ کے حالات مختلف ہوسکتے ہیں اور کھلنے کے اوقات اثرانداز ہوسکتے ہیں۔ نئے مقامات اور ان کے اوقات اس طرح ہیں:

Pages

Main Content
State/Tribal Government: 
Back to Top